خبردار ہوشیار!ترکی کی بنی ہوئی کوئی بھی چیز استعمال نہ کی جائےدنیا کے سب سے بڑے مُلک نے ہائی الرٹ کردیا

نیوز اپ ڈیٹ! سعودی عرب نے اپنے شہریوں کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ ترک مصنوعات کامکمل طور پر بائیکاٹ کریں۔ سعودی حکومت کی جانب سے یہ اعلان ترک صدر رجب طیب اردگان کے حالیہ متنازعہ بیان کے جواب میں کیا گیا ہے۔ضح رہے کہ ترک صدر نے کہا تھا کہ کچھ خلیجی ممالک خطے میں عدم استحکام پیدا کرنے والی پالیسیوں پر گامزن ہیں۔غیر ملکی خبر رساں ادارے

’رائٹرز‘ کے مطابق سعودی عرب کے چیمبر آف کامرس کے سربراہ عجلان العجلان نے ایکٹوئٹ میں کہا کہ ’ہماری قیادت، ہمارے ملک اور شہریوں کے خلاف ترک حکومت کی مسلسل دشمنی کے ردعمل میں ہر سعودی تاجر اور صارف ہر چیز کا بائیکاٹ کریں۔’انہوں نے کہا کہ یہ بائیکاٹ شعبہ درآمد، سرمایہ کاری یا سیاحت کی سطح پر بھی کیا جائے۔بعض خلیجی ممالک پر عدم استحکام پر مبنی پالیسیوں کا الزامات لگانے کے علاوہ ترک صدر نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کے دوران یہ بھی کہا تھا کہ ’یہ بات بھی فراموش نہیں کی جانی چاہیے کہ یہ ممالک کل موجود نہیں تھے اور شاید کل موجود نہیں ہوں گے، اس لیے ہم اللہ کے حکم سے اس خطے میں ہمیشہ اپنے پرچم کو بلند کرتے رہیں گ

Leave a Comment