حضرت علی نے فرمایا پھلوں اور سبزیوں میں کیڑے کیوں پڑتے ہیں؟

اردو نیوز! پر آپ سب مسلمان بھائیوں اور بہنوں کو خوش آمدید سب سے پہلے میں آپ سب سے گزارش کروں گا کہ ایک مرتبہ سورہ فاتحہ اور تین مرتبہ سورہ اخلاص پڑھ کر اس کا ثواب ان تمام مسلمانوں کو پہنچا دےجو آج تک دنیا فانی سے جا چکے ہیں اللہ نے اناج میں کیڑے کیوں پیدا کیے ایک مرتبہ ایک شخص حضرت علی رضی اللہ تعالی عنہ کی خدمت میں آیا اور دست ادب کو جوڑ کر عرض کرنے لگا یا علی میرا ایک سوال ہے

جو ہر وقت میرے ذہن میں پھرتا رہتا ہےوہ سوال یہ ہے کہ اللہ نے انسان کے لیے ہزاروں نعمتیں عطا کی ان میں سے ایک اناج ہے پھل ہے سبزیاں ہیں لیکن یہ رکھنے کے بعد ان میں کیڑے کیوں پڑ جاتے ہیں بس یہ کہنا تھا تو حضرت علی رضی اللہ تعالی عنہ نے فرمایا وہ شخص شکر کرو کہ کھانے پینے کی چیزوں میں کیڑے پڑتے ہیں ان میں کیڑے پڑنا بھی اللہ تعالی کی نعمت ہے وہ شخص حیران ہو گیااور اس نے کہا یا علی اناج میں کیڑے پڑنا اللہ کی نعمت کیسے تو حضرت علی رضی اللہ تعالی عنہ نے فرمایا اے شخص اگر کھانے پینے کی چیزوں میں کیڑے نہ پڑھتے تو یہ تاجر امیر لوگ جس طرح سے سونا چاندی جمع کرتے ہیں ویسے ہی اناج سبزیاں اور میرے اپنے خزانوں میں جمع کرتے رہتے

اور جس طرح سے غریب سونا چاندی دیکھنے کو ترستا ہے ویسے ہی غریب اناج سبزیاں اور میوہ کھانے کو ترستا رہتا تب اللہ نے اناج میں کیڑے پیدا کردیےتاکہ کوئی بھی انسان کھانے پینے کی چیزوں کو ذخیرہ نہ کر سکے اچھی بات دوسروں تک پہنچانا صدقہ جاریہ ہے ابھی اس ویڈیو کو زیادہ سے زیادہ شیئر کریں اور اسلام کو دوسروں تک پہنچانے میں ہمارا ساتھ دیں جزاک اللہ

Leave a Comment

error: Content is protected !!