ٹھہریں ! کیا آپ واقعی وزن گھٹانا چاہتے ہیں اور بہت سارے ٹوٹکے آزما کر تنگ آ چکے ہیں تو یہ ٹوٹکہ آزمائیں

اردو نیوز! ٹماٹر ایک ایسا پھل ہے جو ہر سبزی میں استعمال ہوتا ہے اس کے بغیرکھانوں کو ادھورا کہا جائے تو غلط نہ ہوگا۔ یہ دنیا کے تقریباً ہر ملک میں پایا جاتا ہے، ٹماٹر کو پکا اور بغیر پکائے بھی کثرت سے کھایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ اس کا استعمال سلاد اور رائیتے میں بھی کیا جاتا ہے۔ٹماٹرمیں پوٹاشیم کا ذخیرہ موجود ہے جو نا صرف جسم میں پانی کی کمی کو پورا کرتا ہےبلکہ

بلڈ پریشر کو بھی کنٹرول میں رکھتا ہے۔ ٹماٹر کے بے شمار فوائد میں ایک یہ بھی شامل ہے کہ اس کا استعمال وزن میں کمی کا باعث بنتا ہے اور اگر فوری وزن کم کرنا ہے تو اس کا جوس بنا کر پی لیا جائے۔وزن کم کرنے کے لیے ٹماٹر کا جوس بنانے کا طریقہدو عدد ٹماٹر کا پیسٹ، ایک عدد کھیرا، آدھ چائے والا چمچ کلونجی اور آدھ گلاس پانی، ان تمام اجزا کو بلینڈ کر لیں۔ جوس تیار ہے۔روزانہ نہار منہ یہ جوس پئیں۔ناشتہ بھرپور کریں۔دوپہر میں سلاد کھائیں اور رات کا کھانا زیادہ پیٹ بھر کے نہ کھائیں۔چند دنوں کے استعمال سے اس کے فوائد جان کر دنگ رہ جائیں گےاسٹرابیری کو جہاں لوگ نازک پھل کے نام سے پکارتے ہیں وہیں اس کا ذائقہ بھی کئی افراد کو بے حد پسند ہوتا ہے۔ خوش ذائقہ پھل اسٹرابیری کی افادیت سے یقیناً کوئی انکار نہیں کر سکتا

لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ اِسے نمک کے پانی میں 30 منٹ تک بھگونے سے کیا ہوتا ہے؟ہم آپ کو یہ ہی بتانے جا رہے ہیں کہ مذکورہ عمل سے آپ کو کون سا بڑا فائدہ پہنچ سکتا ہےدراصل اسٹرابیریز کی رنگت اور خوشبو کی وجہ سے کئی چھوٹے چھوٹے کیڑے مکوڑے ان پر موجود ہوتے ہیں، جو انسانی آنکھ سے بچ جاتے ہیں جو پیٹ میں جا کر مختلف معدے کی بیماریوں کو جنم دیتے ہیں، بھلے ہی آپ اس پھل کو دھو کر استعمال کرتی ہوں لیکن یہ کیڑے مکوڑے ہرگز اپنی جگہ نہیں چھوڑتے۔لہٰذا آپ کو کرنا یہ ہے کہ ایک باؤل میں پانی لیں اور اس میں ایک چمچ نمک ڈال دیں۔ اس نمک والے پانی میں تمام اسٹرابیریز کو ڈالیں اور 30 منٹ تک انتظار کریں۔اگر اس پھل پر چھوٹے اور باریک کیڑے مکوڑے ہوئے تو

وہ نمک کے باعث فورا پھل کو چھوڑ دیں گے۔آپ یہ ٹوٹکا کسی بھی دوسرے نازک پھل کیلئے استعمال کر سکتے ہیں۔تاہم اگر آپ کو محسوس ہو کہ نمک مِلے پانی میں پھل کو بھگونے سے اس کا ذائقہ بدل گیا ہے تو آپ یہ عمل سادے پانی میں بھی 1 گھنٹے کے لیے کر سکتے ہیں

Leave a Comment

error: Content is protected !!